پاکستان

خطے کی ترقی کا انحصار افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے، شاہ محمود

[ad_1]

افغان مہاجرین کی باعزت وطن واپسی کو یقینی بنانے کے لیے عالمی برادری کو ہاتھ بڑھانا ہوگا (فوٹو : فائل)

افغان مہاجرین کی باعزت وطن واپسی کو یقینی بنانے کے لیے عالمی برادری کو ہاتھ بڑھانا ہوگا (فوٹو : فائل)

 اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ پورے خطے کی تعمیر و ترقی کا انحصار افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سے امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد نے اسلام آباد میں ملاقات کی، ملاقات میں خطے کی صورتحال، افغان امن عمل کے حوالے سے خصوصی تبادلہ خیال کیا گیا، جب کہ زلمے خلیل زاد نے کراچی اسٹاک ایکسچینج پر دہشت گرد حملے پر اظہار افسوس بھی کیا اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کی بروقت کارروائی، جوانوں کی مثالی جرأت کو سراہا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ افغان امن عمل میں پیش رفت انتہائی حوصلہ افزا ہے، فریقین کی بین الافغان مذاکرات پر آمادگی، مذاکراتی ٹیموں کا اعلان خوش آئند ہے، مذاکرات سے افغانستان میں مستقل اور دیرپا امن کی راہ ہموار ہوگی، افغان امن عمل، اہم مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اس موقع پر ہمیں ان عناصر سے خبردار رہنا ہو گا جو افغانستان میں قیام امن کی کاوشوں کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ پاکستان افغان قضیہ کے مستقل اور پر امن سیاسی حل کے لیے، علاقائی و عالمی فریقین کے ساتھ تعاون کے لیے تیار ہے، پاکستان گزشتہ 40 برس سے افغان مہاجرین کی میزبانی کرتا آ رہا ہے، افغان مہاجرین کی باعزت وطن واپسی کو یقینی بنانے کے لیے ، عالمی برادری کو ہاتھ بڑھانا ہوگا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان مشترکہ ذمہ داری نبھاتے ہوئے افغانستان میں قیام امن کے لیے اپنا مصالحانہ کردار، خلوص نیت سے ادا کرتا رہے گا، کیوں کہ پورے خطے کی تعمیر و ترقی کا انحصار افغانستان میں قیام امن سے مشروط ہے۔



[ad_2]

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button