پاکستان

وفاقی کا بینہ نے سعودی عرب سے 3ڈالر، ادھار تیل کے معاہدے کی منظوری دیدی

اسلام آباد: سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کو ملنے والے 3 ارب ڈالر اور 1.2 ارب ڈالر مالیت کے تیل کی سہولت کے پیکیج بحالی کی سمری کی سرکولیشن کے ذریعے   وفاقی کابینہ نے منظوری دے دی۔ خزانہ ڈویژن کی جانب سے پیش کی گئی سمری میں وزارت قانون اور اٹارنی جنرل آف پاکستان کے دفتر سے سمری کلیئر ہونے کے بعد وزیراعظم کو بھیج دی گئی تھی۔ سمری میں کہا گیا کہ‘ایکسچینج ریٹ کے حوالے سے موجودہ دباؤ فوری طور پر کم کرنے کے لیے’وزیراعظم اس کو کابینہ کے سامنے رکھنے کی منظوری دے دیں، 3  ارب  ڈالرکے ڈیپازٹ  جو سٹیٹ  بنک آف پاکستان کے پاس جمع ہوں گے پر 4 فیصد منافع ادا کر نا ہو گا اور ڈیپازٹ کی معیاد ایک سال ہو گی۔ سعودی عرب ادھار پر تیل کے لئے 1.2ارب ڈالر دے گا، پاکستان ہر ماہ 10کروڑ ڈالر تیل لے سکے گا، سمری میں کہا گیا کہ باہمی رضامندی سے اس سہولت میں ایک سال کی توسیع دی جاسکتی ہے، اس پر 3.80 فیصد مارجن  ادا کرنا ہو گا، یاد رہے کہ وزیراعظم عمران کی جانب سے اکتوبر میں دورہ سعودی عرب کے موقع پر مالی پیکیج کی فراہمی اور تیل کی سہولت دینے کے معاہدے پر اتفاق کیا گیا تھا۔ رواں ہفتے وزیراطلاعات فواد چوہدری نے ٹوئٹر پر اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ سعودی عرب سے 3 ارب ڈالر ٹرانسفر کے حوالے سے تمام قانونی معاملات طے پاگئے ہیں اور یہ ڈالر رواں ہفتے پاکستان کو مل جائیں گے۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button

Adblock Detected

Welcome! It looks like you're using an ad blocker. That's okay. Who doesn't? But without advertising-income, we can't keep making this site awesome.