بین الاقوامی

افغانستان حکومت کا مارچ سے لڑکیوں کے اسکولز کھولنے کا اعلان

طالبان کی عبوری حکومت نے افغانستان میں رواں سال مارچ سے لڑکیوں کے اسکولز کھولنے کا اعلان کردیا ہےجبکہ نائب وزیر اطلاعات ذبیح اللہ مجاہد کا کہنا ہے کہ وزارت تعلیم سکولوں اور سرکاری جامعات دوبارہ کھولنے کیلئے سخت محنت کر رہی ہے‘بعض صوبوں میں معاشی مسائل کی وجہ سے تاحال سکول بند ہیں‘لڑکیوں اور لڑکوں کی کلاسز الگ ہوں گی ‘ہم ملک میں لڑکیوں کے مزید ہاسٹل بنانے کے لیے کام کر رہے ہیں۔ افغان خبر رساں ایجنسی کے مطابق طالبان کے ترجمان و نائب وزیر طلاعات ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ رواں سال مارچ میں لڑکیوں اور لڑکوں کے لیے اسکول اور جامعات کھول دی جائیں گی۔ ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ وزارت تعلیم دو ماہ میں اسکولوں اور سرکاری جامعات کو دوبارہ کھولنے کے لیے سخت محنت کر رہی ہے۔طالبان ترجمان کے مطابق ملک کے بیشتر صوبوں میں اسکولز دوبارہ کھول دیے گئے ہیں تاہم بعض صوبوں میں اب بھی معاشی مسائل کی وجہ سے تاحال بند ہیں۔اس کے علاوہ انہوں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ لڑکیوں اور لڑکوں کی کلاسز الگ ہوں گی جبکہ ہم ملک میں لڑکیوں کے مزید ہاسٹل بنانے کے لیے کام کر رہے ہیں۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button